شعبہ اردو،سی سی ایس یو میں چہار روزہ کثیر لسانی عالمی سیمینار اختتام پذیر

Rate this item
(1 Vote)
شعبہ اردو،سی سی ایس یو میں چہار روزہ کثیر لسانی عالمی سیمینار اختتام پذیر

شعبہ اردو،سی سی ایس یو میں چہار روزہ کثیر لسانی عالمی سیمینار(اردو،ہندی،انگریزی) اختتام پذیر


آخری روزریسرچ اسکالرز کے مقالات کے علاوہ،رسم اجراء اور تقسیم انعامات کا انعقاد
11/دسمبر2018ء
شعبہ اردو، چودھری چرن سنگھ یونیورسٹی، میرٹھ اور اتر پردیش اردو اکادمی کے اشتراک سے’موجودہ سماجی تغیرات کے فکشن پر اثرات“ عنوان سے منعقدہ چہار روزہ کثیر لسانی عالمی سیمینار(اردو،ہندی،انگریزی) کے چوتھے دن ریسرچ اسکالرز سیمینار،کتاب کی رسم اجراء اور تقسیم انعامات کا پرو گرام منعقد ہوا۔ جس میں ابرا ہیم افسر، شوبی زہرا نقوی، تسلیم جہاں اور راحت علی صدیقی نے اپنے اپنے مقالات پیش کیے۔یہ اجلاس مجاہد آزادی مولانا محمد علی جوہر اورمرحوم نواب کوکب حمید کی یاد میں منعقد کیے گئے تھے کی، محفل صدارت پر پرو فیسرشہاب ظفر اعظمی،پٹنہ،نایاب زہرا زیدی،میرٹھ ڈا کٹر ارشد اقبال،نوشاد عالم،جمشید پور اور ڈاکٹر محمد عباس،جمشید پور رونق افروز رہے۔نظامت کے فرائض تابش فرید نے انجام دیے۔بعد ازاں تقسیم انعامات کا جلسہ منعقد ہوا جس کی صدارت پروفیسر غلام ربانی، بنگلہ دیش، اشتیا ق سعید، ممبئی، حاجی عمران صدیقی اور ڈا کٹر نگار عظیم نے کی۔ استقبالیہ کلمات ڈا کٹر شاداب علیم، شکریے کی رسم ڈا کٹر ارشاد سیانوی اور نظامت کے فرائض ڈاکٹر آصف علی نے انجام دیے۔ پرو فیسر اسلم جمشید پوری نے مہمانوں اور مقالہ نگاروں کو پھول، سر ٹیفکٹ اور نشان یاد گار دے کر ان کا اعزازکیا۔
اس مو قع پربنگلہ دیش سے تشریف لائے پروفیسر غلام ربانی نے شعبہ اردو، چودھری چرن سنگھ یو نیورسٹی سمیت پورے ہندوستانیوں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ بنگلہ دیش اور ہندوستان کی اردو کہانیوں کے پڑھنے کے بعد میں اس نتیجے پر پہنچا ہوں کہ بنگلہ دیش اور ہندو ستانی معاشرے کے مسائل یکساں ہیں اور اردو افسانوں نے ان مسائل کو بخو بی پیش کیا ہے۔
پروفیسر شہاب ظفر اعظمی نے اس چہار روزہ کثیر لسانی عالمی سیمینار(اردو،ہندی،انگریزی) کو غیر معمو لی بتاتے ہوئے کہا کہ جب ادب سماج کا آئینہ ہے تو سماجی تغیرات کے فکشن پر اثرات سے کیسے بچا جا سکتا ہے۔
نایاب زہرا زیدی نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اگر چہ اردو فکشن کی عمر انگریزی، عربی، فارسی اور سنسکرت جیسی زبانوں کے ادب سے بہت کم ہے لیکن سماجی تغیرات کو پیش کرنے میں اور سماجی حقیقت کو بیان کرنے میں کسی سے پیچھے نہیں ہے۔
ڈاکٹر نگار عظیم نے کہا کہ اگر آپ اردو فکشن کی سلسلے وار قرأت کریں گے تو بہت آ سانی سے سماجی تغیرات کی پو ری تاریخ جان سکتے ہیں۔اس مو قع پرنا یاب زہرا زیدی کی کتاب”آخری پڑاؤ“ جس کو ڈاکٹر شاداب علیم نے مرتب کیا ہے کا اجراء مہمانان کے ہاتھوں عمل میں آیا۔
اس موقع پرڈا کٹر اسلم صدیقی، ڈا کٹر ہما مسعود،، محمد بشیر مالیر کوٹلوی،فر زانہ بنت عاصم،مسعود اختر،شاداب علی،انیس میرٹھی، مدیحہ اسلم ڈا کٹر فر حت جہاں،ڈکٹر اختر آزاد، اسرار احمد، آفتاب انصاری،فیضان انصاری،محمد شمشاد،اشتیاق سعید،عبدالباری،ارشد منیم،جاوید انور،احمد حسنین،نیاز اختر،نذیر میرٹھی، رفیق،ریوانی،عمائدین شہر اورکثیر تعداد میں طلبہ و طالبات نے شر کت کی۔
٭٭٭

Leave a comment

Make sure you enter the (*) required information where indicated. HTML code is not allowed.

نیا مضمون

Calendar

« March 2019 »
Mon Tue Wed Thu Fri Sat Sun
        1 2 3
4 5 6 7 8 9 10
11 12 13 14 15 16 17
18 19 20 21 22 23 24
25 26 27 28 29 30 31

ممبر لاگ ان

Go to top