غزل : نغمہ ناز مکتومیؔ GHAZAL - NAGHMA NAAZ MAKTOOMI

Rate this item
(2 votes)
غزل : نغمہ ناز مکتومیؔ  GHAZAL - NAGHMA NAAZ MAKTOOMI


 غزل


 نغمہ ناز مکتومیؔ 



دُنیا کی بے   نیازی کا    چرچا ہی کیوں کریں
اپنی انا کو شہر  میں     رُسوا ہی کیوں کریں

تیرے   غموں کو   ہم نے جو دل    سے لگا لیا
خوشیوں   کو تیرے غم کا مدا وا ہی کیوں کریں

ہم مطمئن   ہیں اپنی    وفاؤں   سے   ہر طرح
تجھ سے تری جفاؤں  کا شکوہ ہی  کیوں کریں

کرتا ہے فر ق   دونوں     میں اک    جلوۂ   نگاہ
اہلِ خرد    کا ہم    بھلا سجدہ   ہی کیوں کریں

بد نامیوں کا    تیری    ہمیں    خوف    ہے فقط
تو ہی بتا کہ  ہم تجھے    رُسوا ہی   کیوں کریں

نغمہ ؔ رہ حیا ت    میں    غم ساتھ    ساتھ   ہے
محرومیوں  کا جابجا    چرچا ہی    کیوں     کریں


نغمہ ناز مکتومیؔ مکان نمبر ۱۱ ، کروس روڈ نمبر ۶۔ بی
آزاد نگر ، مانگو ، جمشید پور ۔ ۸۳۲۱۱۰
جھارکھنڈ ، انڈیا
E - mail This e-mail address is being protected from spambots. You need JavaScript enabled to view it.  

Last modified on

1 comment

  • Abrar Mojeeb

    bahut umda ghazal hai,

    Abrar Mojeeb Comment Link

Leave a comment

Make sure you enter the (*) required information where indicated. HTML code is not allowed.

نیا مضمون

Calendar

« March 2019 »
Mon Tue Wed Thu Fri Sat Sun
        1 2 3
4 5 6 7 8 9 10
11 12 13 14 15 16 17
18 19 20 21 22 23 24
25 26 27 28 29 30 31

ممبر لاگ ان

Go to top