الأحد, 22 أيلول/سبتمبر 2019 23:04

کسی بھی افسانہ نگار کی پہلی کہانی پہلی اولاد کی طرح اہم ہوتی ہے: پروفیسر اسلم جمشید پوری

Rate this item
(0 votes)

”کسی بھی افسانہ نگار کی پہلی کہانی پہلی اولاد کی طرح اہم ہوتی ہے“: پروفیسر اسلم جمشید پوری
شعبہ اردو میں ایک ادبی نشست کا انعقاد
(پریس رلیز)
میرٹھ 21 / ستمبر 2019ء

شعبہ اردو چودھری چرن سنگھ یونیورسٹی کے پریم چندسیمینار ہال میں ایک ادبی پروگرام کا انعقاد کیا گیا جس میں شعبہ اردو میں پڑھنے والے ایم۔ اے، ایم فل، پی ایچ ڈی کے طلباء نے پروگرام کی پہلی نشست میں اپنی تخلیقات پیش کیں اور دوسری نشست میں شعبہ اردو کے استاد ڈاکٹر آصف علی، ڈاکٹر شاداب علیم نے تخلیقات پر اپنے خیالات کا اظہار کیا پروگرام کی صدارت پروفیسر اسلم جمشید پوری نے کی، نظامت کے فرائض شعبہء اردو کی رسرچ اسکالر شوبی زہرا نقوی نے بحسن و خوبی انجام دی۔
پروگرام کا آغاز ایم۔اے کے طالب علم اسراراحمد نے تلاوت کلام پاک سے کیا۔بعداذاں ایم۔اے کی طالب علم صبا نے نعت اور علما نے اقبال کی غزل پیش کی۔ رہنما شفا نے اپنا ایک منفرد مضمون بعنوان”اردو کے فروغ میں مدارس کا کردار“پیش کیا۔جس کو کافی پسند کیا گیا۔اصفہ انجم نے اپنی کہانی”قیدی“ پیش کی جبکہ، شاکر مطلوب نے اپنی کہانی”جڑیں“منفرد انداز میں سناکر سامعین کو متاثر کیا اور مریم نے اپنی کہانی ”ملازمہ“ کی قرأت کرکے سامعین کو داد دینے کے لیے مجبور کر دیا۔ اسرار احمد، تابش فرید اور فیضان انصاری نے مشہور شعراء کی غزلیں مترنم لب و لہجے میں پیش کیں۔ ڈاکٹر شاداب علیم نے طلبا و طالبات کی تخلیقات پر مبارک باد دیتے ہوئے کہا کہ ان بچوں کی یہ ابتدائی تخلیقات ہیں جن میں تھوڑی بہت کمیوں کا ہونا عام بات ہے۔جن کو آگے سدھارا جا سکتا ہے۔ پروگرام میں تخلیق کاروں کو مبارک باد پیش کرتے ہوئے ڈاکٹر آصف علی نے کہا کہ جن تخلیقات پر تن من دھن خرچ ہوتا ہے،وہ قابل قبول ہوتی ہیں۔صدارتی خطبے میں پروفیسر اسلم جمشید پوری نے سبھی طلبا ء و طالبات کے کلام پر مبارک باد پیش کرتے ہوئے کہا کہ تعلیم کے ساتھ تربیت شخصیت کو بہتر بناتی ہے۔ ادبی محفلوں سے طالب علم جہاں سلیقہ، روایت کا احترام اور نت نئے ڈھنگ سیکھتا ہے، وہیں اس کے اندر بردباری آتی ہے۔ کسی بھی افسانہ نگار کی پہلی کہانی پہلی اولاد کی طرح اہم ہوتی ہے۔سبھی طلباء و طالبات کی حوصلہ افضائی کرتے ہوئے صدر شعبہء اردو نے مفید مشوروں سے بھی نوازا اور آئندہ بہترتخلیقات پیش کرنے کی ہدایت دی۔
اس موقع پر ڈاکٹر ارشاد سیانوی، ڈاکٹر پشپیندر کمار نمؔ، محمد نوید حاں،ثناایاز، شاذیہ، فرہین، محمد شمشاد شہاب الدین، کلدیپ وغیرہ حاضر رہے۔

٭٭٭

 

Read 1757 times

Leave a comment

Make sure you enter all the required information, indicated by an asterisk (*). HTML code is not allowed.

Latest Article

Contact Us

RAJ MAHAL, H. No. 11
CROSS ROAD No. 6/B
AZAD NAGAR, MANGO
JAMSHEDPUR- 832110
JHARKHAND, EAST SINGHBHUM, INDIA
E-mail : mahtabalampervez@gmail.com

Aalamiparwaz.com

Aalamiparwaz.com is the first urdu web magazine launched from Jamshedpur, Jharkhand. Users can submit their articles, mazameen, afsane by sending the Inpage file to this email id mahtabalampervez@gmail.com, aslamjamshedpuri@gmail.com