الخميس, 17 تشرين1/أكتوير 2019 00:07

سر سید نے اپنے نظریے کی اشاعت کے لیے با ضا بطہ عملی اقدام بھی اٹھائے:محترم طالب زیدی

Rate this item
(0 votes)

سر سید نے اپنے نظریے کی اشاعت کے لیے با ضا بطہ عملی اقدام بھی اٹھائے:محترم طالب زیدی
میرٹھ سمیت مغربی اتر پردیش کے اسکولوں میں ”جشنِ سرسید تقریبات“ انعقاد

(پریس ریلیز)
میرٹھ16/اکتوبر 2019ء

سالہا ئے گذشتہ کی طرح امسال بھی شعبہ اردو، چودھری چرن سنگھ یونیورسٹی اور سر سید ایجوکیشنل سوسائٹی، میرٹھ کے اشتراک سے محسن قوم عظیم تعلیمی رہنما سرسید احمد خاں کی یوم پیدائش کے موقع پر ”جشنِ سرسید تقریبات“ کے دوسرے دن میرٹھ میں حسنیٰ بیگم اردو میڈیم موڈل پبلک اسکول،(شاہ پیر گیٹ، میرٹھ)،نیو ہورائزن پبلک اسکول، زیدی نگر سوسائٹی،میرٹھ،اسماعیل نیشنل گرلز انٹر کالج، کوتوالی میرٹھ میں نہایت ہی تزک و احتشام کے ساتھ منائی گئی۔
سر سید کا شمار عالمی سطح کے ایسے پیغامبروں میں ہو تا ہے جنہوں نے نہ صرف اپنا نظریہ پیش کیا بلکہ نظریے کی اشاعت کے لیے با ضا بطہ عملی اقدام بھی اٹھائے۔ مہمانِ خصوصی کے بطورشرکت فرما رہے۔ نیو ہورائزن پبلک اسکول میں صدارتی خطبہ پیش کرتے ہوئے معروف شاعر طالب زیدی نے کہا۔مہمانِ خصوصی نے بطور محترم بدرالحسن صاحب نے کہا کہ سر سید احمد خاں نے تعلیم کے فروغ کے لیے اپنی پوری زندگی وقف کردی ہماری زندگی کا کوئی گوشہ ایسا نہیں جو ان کے احسانات سے گرں بار نہ ہو۔مہمانانِ عزازی محترم صابر خان نے کہا کہ سرسید تعلیم کے ساتھ ساتھ تربیت پر بھی زور دیتے تھے۔کیونکہ اچھی تربیت انسان کی شخیت کو سنوارنے میں اہم رول ادا کرتی ہے۔محترم بھارت بھوشن نے سر سید کو دنیا کے ان دانشوروں میں شمار کیا جنہوں نے اپنے قلم اور اپنے علم سے دنیا کے انسانوں میں تبدیلی لا نے کافریضہ انجام دیا۔ خصوصی مقرر ڈاکٹر شاداب علیم نے سر سید کا تفصیلی تعروف پیش کرتے ہوئے کہا سرسیدکا میرٹھ سے بڑا گہرا تعلق رہا ہے۔مولانا اسماعیل میرٹھی نے ان کے نقشے قدم پر چل کر تعلیم کو عام کرنے بالخصوص لڑکیوں کو تعلیم یافتہ بنانے کے لیے میر ٹھ شہر میں تعلیمی ادارے قائم کئے۔ اسکول کی ڈائرکٹرنایاب زہرا زیدی نے بچوں کو تعلیم کی اہمیت و افادیت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ آج کے وقت میں تعلیم انسانی زندگی میں اتنی ہی ضروری ہے جتنا انسانی زندگی کے لیے ہوا اور پانی۔پروگرام کی شروعات اسکول کے بچوں نے حمد نات اور تلاوت کلام پاک سے کی،اور سرسید کا تعارف پیش کیا۔ ا پروگرام کی نظامت کے فرائض اسکول کے اسا تذ ہ محترمہ ناظمہ اورمحترم محمد عابدنے مشترکہ طور پر ادا کئے۔ پروگرام کے آخرمیں علی گڑ ترانہ پیش کیا گیااور اسکول کی پرنسپل محترمہ شوبھا صاحبہ نے سبھی مہمانان کو مومیٹو پیش کئے اور شکریہ کی رسم ادا کی۔
حسنیٰ بیگم اردو میڈیم موڈل پبلک اسکول،(شاہ پیر گیٹ، میرٹھ) میں بھی بہت شاند جشن سرسید تقریبات کا اہتمام کیا گیا، پروگرام میں صدارت کے فرائض شہر کے معروف ایڈوکیٹ ایاز احمد نے انجام دیے مہمانِ خصوصی کے بطور میرٹھ کی معروف شخصیت ڈاکٹر سراج احمد نے شرکت کی۔مہمانان عزازی کے بطور ڈاکٹر فرحت خاتون، اور محترم قمرالحسن شریک محفل رہے۔حمد و نعت اور سرسید کا تعارف اسکول کے طلبہ نے پیش کیا۔اسکول کے پرنسپل محترمہ شہناز احمد نے مہمانوں کو پھولوں کا گلدستہ اور سر سید یادگار مومینٹو پیش کئے۔اسکول کے ڈائرکٹر محترم آفاق احمد خاں نے نہایت دل چسپ انداز میں بچوں سے سرسید کوئز لیا اور شکریہ کے فرائض انجام دئے۔
اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے ڈاکٹر سراج الدین نے کہا کہ سرسید اور مولانا اسماعیل میرٹھی دونون ہی تعلیم کے ذریعہ قوم کو مین اسٹیم پر لانا چہاتے تھے اس لیے دونوں تعلیمی ادارے قائم کر رہے تھے۔انہوں نے مزید کہا یہ دونوں ایسے زمانے میں سامنے آئے جب ہندوستانی معاشرہ بالخسوس مسلم طبقہ علم کی روشنی سے دور تھا۔ایڈوکیٹ ایاز صاحب نے کہا کہ یہ کوئی معمولی بات نہیں کے 17/ اکتوبر کو سرسید کونہ صرف قومی سطح پر بلکہ بین الاقوامی سطح پر بھی یاد کیا جاتا ہے اور ہمیشہ یاد کیا جاتا رہے گا۔محترمہ فرحت خاتون نے سر سید پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ سرسید نے نہایت پر آشوب حالات میں علم کی ایسی شمع روشن کی جس سے آج ہندوستان ہی نہیں پوری دنیا منور ہو رہی ہے۔
اسماعیل نیشنل گرلز انٹر کالج میں بھی نہایت ہی اہتمام کے ساتھ جسن سرسیدتقریبات کا انعقاد کیا گیا۔پروگرام کی صدارت کے فرائض محترمہ طاہرا رضوی نے انجام دیے۔مہمان خصوصی نے بطور ڈاکٹر فرحت خاتون نے شرکت فرمائی،اور مہمانانِ ذی وقار کے بطورڈاکٹر سراج الدین،اور محترمہ سلطانہ جیلانی موجود رہے۔حمد نات اور تلاوت قرآن سے پروگرام کی شروعات ہوئی۔استقبالیہ کلمات اسکول کی پرنسپل محترمہ تبسم خاتون نے اور نظامت کے فرائض محترمہ نگہت پروین نے انجام دیے اور اسکول کی ٹیچر الماس صاحبہ نے سر سید کوئزکرائی۔
سرسید کی ادبی تعلیمی خدمات پر روشنی ڈالتے ہوئے ڈاکٹر فرحت خاتون نے کہا کہ سرسید کے مشن اور ان کی تعلیم کو نئی نسل تک منتقل کرنا اور عالمی سطح پر راہ ہموار کرنا ہماری ذمہ داری ہونی چاہئے یہی سر سید کے مشن کی اشاعت و تبلیغ ہو گی۔طارہرا رضوی نے کہا کہ سر سید نے ہندوستان کی زوال آ مادہ قوم کو تعلیم کے زیور سے آ راستہ کر نے کے لیے سر دھڑ کی بازی لگا دی تھی۔آج ان کے تعلیمی نظریات کو عام کر نے کی ضرورت ہے۔ڈاکٹر سراج الدین نے کہا کہ سرسید احمد خاں نے اپنے نظریات، فکرو فلسفے سے ایک عالم کو متاثر کیا۔ علم کا ایسا چراغ روشن کیا کہ جس سے آج دنیا کے کونے کونے میں ہزاروں چراغ روشن ہیں۔محترمہ سلطانہ جیلانی نے کہا کہ ہمارا سر سید کو بڑا خراج عقیدت یہ ہو گا کہ ہم اپنے طالب علموں کی اسی نہج پر ذہن سا زی کریں۔
مظفرنگر: مظفرنگر نواب عظمت علی خان گرلز ڈگری کالج، مظفر نگر میں پروفیسر اسلم جمشید پوری کی صدارت میں جشن سرسید کی شاندار تقریب منعقد ہوئی،ڈاکٹر ہاشم رضا زیدی مہمان خصوصی اور ڈاکٹر ارشد اقبال اور ارشد اکرام بطور مہمان اعزازی شریک ہوئے۔ کالج کی اردو استاد محترمہ ثنا صاحبہ نے جلسے کی نظامت کی۔ کالج کی کئی طلبہ نے سرسید پر مقالے پیش کیے۔ اس موقع پر سر سید کوئز کا بھی انعقاد ہوا، جس میں ۰۱/ طلبات نے انعامات حاصل کیے۔ کالج کی پرنسپل ڈاکٹر انیتا اگروال نے مہمانوں کا شکریہ ادا کیا۔
دیوبند: اسلامیہ ڈگری کالج، دیو بند میں شاندار جشن سرسید کا انعقاد عمل میں آیا جلسے کی نظامت کالج کے پرنسپل ڈاکٹر اسجد ترکی نے اور صدارت پروفیسر اسلم جمشید پوری نے کی۔ مہمان خصوصی کے طور پر محترم مولانا شاہ عالم گورکھ پوری، استاد دارالعلوم، شریک ہوئے۔
اس موقع پر ایک ساندار سرسید کوئز کا بھی اہتمام کیا گیا۔ طلباء و طالبات نے اپنے پروگرام پیش کئے۔
جشن سر سید کوئیز سیرز کی نیرونی ٹیم گلاوٹھی میں مفید عام انٹر کالج،ہاپوڑ میں آؤ پڑھیں، سوسائٹی، ریحان پبلک اسکول،سیانہ میں اسلامیہ جونیر ہائی اسکول اور بلند شہر میں گرلز ڈگری کالج میں بھی سر سید کے پیغام کو عام کیا۔
مفید عام انٹر کالج (گلاوٹھی)مفید عام انٹر کالج گلاوٹھی میں پروفیسر جمال احمد صدیقی کی صدارت میں جشن سرسید کی شاندار تقریب منعقد ہوئی، محترم سرتاج ایڈوکیٹ مہمانے خصوصی اور محمد آصف، شاکر مطلوب، مہمانان عزازی شریک رہے۔ کالج کے پی ٹی آئی سہیل احمد صاحب نے جلسے کی نظامت کی اس موقع پر شاکر مطلوب نے سرسید کوئز کرائی۔ جس میں 10/ طلبہ کو انعامات سے نوازا گیاکالج کے پرنسپل محمد ڈاکر نے مہمانوں کا شکریہ ادا کیا۔
ہاپوڑ: ہاپوڑ میں آؤ پڑھیں سوسائٹی ریحان پبلک اسکول میں جشن سرسید کا شاندار انعقاد عمل میں آیا پروگرام کی نظامت حاجی اسماعیل اور صدارت جمال احمد صدیقی نے کی اور مہمان خصوصی کے طور پر محترم سرتاج احمد ایڈوکٹ شریک ہوئے۔اس موقع پر ایک شاندار کوئز کا بھی اہتمام کیا گیا اور اس میں ۷/ اسکولوں کی ٹیم نے حصہ لیا اورمہر پبلک اسکول کی ٹیم نے سب سے زیادہ سالوں کے جوابات دیکرپہلا نمبر حاصل کیا۔ پروگرام کے کنونر فصیح چودھری کو کنوینر مشرف چودھری، فراز چودھری، ضیاء الرحمنٰ، جمیل احمد وغیرہ حضرات موجود رہے۔
جشن سر تقریبا ت کے تحت 17/ اکتوبر 2019ء مائی پبلک اسکول شاستری نگر، میرٹھ، میں صبح9:00/ بجے،حمید یہ گرلز ہائر سیکنڈری اسکول،خیر نگر میں 10:30بجے،مظفر نگر: انس نصیرانٹر کالج 8:00/ بجے سر سید لیکچر سیریز اور سر سید کوئز کا اہتمام کیا جائے گا۔ ڈی ٹی ایس گرلز ڈگری کالج، چلکانہ، سہارنپور میں 12/بجے جس میں مقریرین کی حیثیت سے ڈاکٹر فضل الرحمنٰ(پرنسپل فیضِ عام ڈگری کالج) محترم ارشد خان(پرنسپل ٹرانسلیم اکیڈمی)،محترم آفاق احمدخان،محترمہ رما نہرو، ڈاکٹر جمال احمد صدیقی، محترم قاری شفیق الرحمنٰ، ڈاکٹر سراج الدین، محترم رفعت جمالی، محترمہ قمرانساء زیدی، پروفیسر اسلم جمشید پوری، ڈاکٹر شاداب علیم، محترم مفتی راحت، مولانا شاہ عالم وغیرہ شرکت کریں گے۔

 

Read 2559 times

Leave a comment

Make sure you enter all the required information, indicated by an asterisk (*). HTML code is not allowed.

Latest Article

Contact Us

RAJ MAHAL, H. No. 11
CROSS ROAD No. 6/B
AZAD NAGAR, MANGO
JAMSHEDPUR- 832110
JHARKHAND, EAST SINGHBHUM, INDIA
E-mail : mahtabalampervez@gmail.com

Aalamiparwaz.com

Aalamiparwaz.com is the first urdu web magazine launched from Jamshedpur, Jharkhand. Users can submit their articles, mazameen, afsane by sending the Inpage file to this email id mahtabalampervez@gmail.com, aslamjamshedpuri@gmail.com