الجمعة, 28 حزيران/يونيو 2013 18:35

انسانیت کا تقا ضا یہ ہے کہ ہم سب کے لیے کام کریں۔قاری شفیق الرحمن قاسمی اترا کھنڈ میں آ ئے طوفان میں لقمۂ اجل بن جانے وا لے لوگوں کی یاد میں تعزیتی جلسہ Featured

Rate this item
(0 votes)

 انسانیت کا تقا ضا یہ ہے کہ ہم سب کے لیے کام کریں۔قاری   شفیق الرحمن قاسمی
 اترا کھنڈ میں آ ئے طوفان میں لقمۂ اجل بن جانے وا لے لوگوں کی یاد میں تعزیتی جلسہ


                  شعبۂ اردو، چودھری چرن سنگھ یو نیورسٹی ،میرٹھ اور جا گرک ناگرک ایسو سی ایشن،میرٹھ کے مشترکہ اہتمام میں اترا کھنڈ میں آ ئے طوفان میں لقمۂ اجل بن جانے وا لے لوگوں کی یاد میں تعزیتی جلسہ کا انعقاد عمل میں آ یا۔جلسے کی صدارت ریٹائرڈ آئی اے ایس افسر محترم پربھات کمار رائے نے اور نظا مت گریش شکلا نے ادا کی۔
جلسے کو خطاب کرتے ہو ئے خطیب جامع مسجد،میرٹھ محترم قاری شفیق الرحمن قاسمی نے کہا ۔ ’’قدرتی آ فات عبرت کے لیے ہو تی ہیں۔ قرآن میں متعدد ایسی آ فات و حادثات کا ذکر ہے۔ یہ ذکر اس لیے ہو تا ہے تاکہ ہم ان سے سبق حا صل کریں۔ ان مشکلات کے لمحات میں انسانیت کا تقا ضا یہ ہے کہ ہم سب کے لیے کام کریں۔‘‘
اس مو قع پر اترا کھنڈ کے کیدار نا تھ کا سفر مکمل کر کے کسی طرح اپنی جان بچا کر وا پس آ نے والے پون کمار نے وہاں کے آنکھوں دیکھے حا لات کا بیان کیا۔انہوں نے بتایا کہ قدرتی آ فات کے بعد کس طرح انسان نے انسان کو لو ٹا،مجبوریوں کا فائدہ اٹھایا،دس اور بیس رو پے کے سا مان کو سینکڑوں رو پے میں فروخت کیا گیا۔
جان بچا کر وا پس آ نے والے ایک اور عینی شاہد چو دھری یشپال نے دوران طوفان ،درد ناک اور دلدوز واقعات کا بیان کیا۔انہوں نے بتایا کہ مقامی ریا ستی سرکار ہر محاذ پر ناکام ہے اور انسا نوں کو بچا نے کا کوئی انتظام سر کار نے نہیں کیا۔آج بھی ہزاروں افراد پھنسے ہوئے ہیں۔
صدر شعبۂ اردو ڈا کٹر اسلم جمشید پوری نے اس مو قع پر کہا کہ اتنی بڑی تباہی ،اتنے زیا دہ نقصا نات کہ اب تک ہزا روں لوگوں کے مختلف مقامات پر پھنسے رہنے کا اندیشہ ہے۔ ان سب کے با وجود اسے قومی پریشا نی کیوں نہیں قرار دیا گیا اور ہندو ستان کے سینکڑوں بڑے صنعتی گھرا نے کہاں سو ئے ہو ئے ہیں۔سب مل کر ایک ہفتے میں پھنسے ہو ئے لوگوں کو نکال سکتے تھے۔
اپنے صدارتی خطبے میں محترم پربھات رائے نے کہا کہ شعب�ۂ اردو کی یہ کوشش قابل ستائش ہے ۔ہم سب کو مل کر یہ کوشش کر نی چا ہیے کہ آئندہ اس طرح کے حادثات کے وقت ،ایسی حکمت عملی اپنا ئی جائے کہ جانی نقصان کم ہو اور جنگلات کا تحفظ بھی کیا جا نا چا ہیے۔ جس رفتار سے جنگلات اور پہا ڑوں کی تخریب کا ری کا عمل جاری ہے اس سے اس طرح کے حادثات کا اندیشہ بڑھ جاتا ہے۔
طالب زیدی،اسنہویر پنڈیر اور قیصر عباس نے بھی جلسے سے خطاب کیا۔
اس مو قع پر دو منٹ کی خا مو شی اختیار کر کے ہمیشہ کے لئے جدا ہو نے وا لوں کو خراج پیش کیا گیا اور صدر شعبۂ اردو ڈاکٹر اسلم جمشید پو ری نے دعا کرا ئی۔جس کے بعد جلسے کا خا تمہ ہوا۔اتفاق رائے سے طے پا یا کہ ایک قرار داد مرکزی اور اترا کھنڈ سر کار کو بھیجی جائیں:
قرار داد
 ما حولیات کے تحفظ کے لیے پر زور کوششیں کی جائیں اورما حولیات سے چھیڑ چھاڑ کرنے وا لوں کے خلاف سخت قانون بنایا جائے۔
 مقا می باشندوں کی صحیح مردم شماری کی جائے۔
 زیا دہ سے زیادہ شجر کاری کی جائے۔
 باندھوں کی تعمیرات پر ما حولیات کے ماہرین کی را ئے کو ترجیح دی جائے ۔
 پہاڑوں پر موجود مذہبی مقا مات پر جانے وا لوں کا رجسٹریشن کر کے ان کی تعداد پر قابو پا یا جائے۔
 چھوٹے باندھوں کو ترجیح دی جائے۔
 کار خانوں اور شہروں کے ذریعے مکدر کی جارہی آب و ہوا پر قدغن لگایاجائے۔
 پہاڑی علا قوں میں ذاتی گاڑیوں پر رو ک لگا کر پبلک ٹرانسپورٹ کو بہتر بنانے کی سعی کی جائے۔
 سبھی مذہبی اور سیا حتی مقا مات پر ہو ٹلوں سمیت تمام طرح کی سہولیات پر حکومت کے ذریعے فیس مقرر کی جائے اور تحفظ کے مناسب انتظامات کو یقینی بنا یا جائے۔
اس موقع پرحاجی مشتاق سیفی،ایس ڈی شرما،بی ایم گرگ،ماسٹر حامد علی،سلیم سیفی،شاہد سیفی،جے،پی کوشک،راکیش پاٹھک،جی ایس بیدی،آنند پرکاش کش،مینل گوتم،نیتو گرگ،سرویش گرگ،اسلام احمد،دلشاد علی،شوکین علی،مسرت جہاں،پنکج شرما،سعیدبزمی،ارشاد علی،آمر نذیر ڈار،محمد مرتضی،اروند شکلا،اجے چوہان،سنی چوہان،دل بہار احمد وغیرہ موجود تھے۔

Read 1132 times

Leave a comment

Make sure you enter all the required information, indicated by an asterisk (*). HTML code is not allowed.

Latest Article

Contact Us

RAJ MAHAL, H. No. 11
CROSS ROAD No. 6/B
AZAD NAGAR, MANGO
JAMSHEDPUR- 832110
JHARKHAND, EAST SINGHBHUM, INDIA
E-mail : mahtabalampervez@gmail.com

Aalamiparwaz.com

Aalamiparwaz.com is the first urdu web magazine launched from Jamshedpur, Jharkhand. Users can submit their articles, mazameen, afsane by sending the Inpage file to this email id mahtabalampervez@gmail.com, aslamjamshedpuri@gmail.com